12

سفیر انقلاب کا خاندانی پسِ منظر

Dr Mohammad Ali Naqvi Shaheedسفیر انقلاب ’’ڈاکٹر محمد علی نقوی شہید‘‘ کے خاندان کا سلسلہ امام حضرت علی نقی علیہ السلام سے ملتا ہے تاہم صوبہ پنجاب کے دارالخلافہ لاہورکے مضافات میں آپ کے خاندان کی آمد تقریباً تین صدیاں پہلے بتائی جاتی ہے۔آغاز میں یہ سادات خاندان لاہور کے مغربی علاقہ ’’شرقپور‘‘ میں آباد ہوا جہاں انھوں نے خاندانی زہدو تقویٰ کی بدولت گردونواح کی مسلم وغیر مسلم آبادی کو گرویدہ کیا۔آپ کے آبائو اجداد نے بہت سے غیر مسلم افراد کو مشرف بہ اسلام کرکے اسلامی طاقت میں اضافہ فرمایا اور عزاداری سید الشہداء کو تقویت بخشی۔

تفصیل سے

سفیرانقلاب آغوش مادر سے آغوش مکتب تک

Dr Mohammad Ali Naqvi Shaheed - drmanaqvi.comسفیر انقلاب ڈاکٹر محمد علی نقوی ۲۸ ستمبر۱۹۵۲ء کو علی رضا آباد لاہور میں پیدا ہوئے۔ آپ نے جس گود میں آنکھ کھولی وہ علوم آل محمدصلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی درسگاہ تھی اورجس آنگن میں پروان چڑھے وہ ’’شہرعلم‘‘ کا ایک حصہ تھا۔ آپ کو اپنی پشت میں پہلے عالم زادہ ہونے کا اعزاز تو حاصل تھا ہی مگر ملت جعفریہ کے مسیحا علامہ سید صفدر حسین نجفی مرحوم کی شفقت آپ کو روز اول سے ممتاز کر گئی۔

تفصیل سے

آئی۔ایس ۔او کا قیام اور سفیر انقلاب

dr m ali naqvi thumbیوں تو امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کا قیام ۲۲ مئی ۱۹۷۲ء کو عمل میں آیا مگر جذبات کے ان بھڑکتے شعلوں کا اصل محرک وہ چنگاری تھی جو ۱۹۶۶ء میں ’’شیعہ اسٹوڈنٹس ایسوسی ایشن‘‘ کی شکل میں چمکی تھی میں سمجھتا ہوں کہ محرک کی معرفت کیے بغیر کسی چیز کی حقیقت کو گہرائی تک جانچنا مشکل ہوتا ہے لہٰذا مورخ کے حوالہ سے میری یہ ذمہ داری بنتی ہے کہ حال اورمستقبل کے قارئین پر واضح کروں کہ کسی چیز کی تعمیر کتنی مشکل،محنت طلب، کٹھن اورپر مصائب ہوتی ہے۔۔؟

تفصیل سے
Scroll to Top